ریاستی دہشت گردی مردہ باد: ملک بھر کے ملازمین اور محنت کش آج 11فروری کو ’یوم سیاہ‘ منائیں گے، ملک گیر ہڑتال کا اعلان

رپورٹ: میڈیا سیل، آل پاکستان ایمپلائز، پنشنرزولیبرتحریک

آل پاکستان ایمپلائز، پنشنرز و لیبر تحریک کی قیادت کی جانب سے 11 فروری 2021ء کو بطور یوم سیاہ منانے، قلم چھوڑ/تالہ بند ہڑتال کرنے اور 15فروری2021ء کو اسلام آباد میں احتجاجی دھرنے کا اعلان کیا گیا ہے اور حکومت کو اس سے متعلق پیشگی نوٹس جاری کردیا گیا۔

آل پاکستان ایمپلائز، پنشنرز و لیبر تحریک کی قیادت اسلام آباد میں سرکاری ملازمین کے پرامن احتجاج پرآنسو گیس کی شیلنگ، لاٹھی چارج اور گرفتاریوں کی شدید الفاظ میں مذمت کرتی ہے۔ سرکاری ملازمین کے پرامن احتجاج پر تشدد کرنا محنت کشوں کے جائز حقوق کی آواز دبانے کی گھناونی سازش ہے جو اس ملک کے محنت کش کبھی کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔ پرامن احتجاج آئین پاکستان کے رُو سے پاکستانی شہریوں اور ملازمین کا بنیادی حق ہے اور اس پر قدغن لگانا بدترین جمہوریت اور آمرانہ رویے کی عکاسی کرتا ہے۔

ملازمین کی نمائندہ تنظیموں کے ایجنڈے اور احتجاج کا طریقہ کار مختلف اور الگ ہوسکتا ہے، لیکن سرکاری ملازمین کے احتجاج جیسے بنیادی حق کے تحفظ کیلئے ملک بھر کے تمام سرکاری ملازمین اور لیبر یونینز غیرمشروط طور پر متحد ہیں۔ ہم حکومت اور بیوروکریسی کی جانب سے تقسیم کرو اور حکومت کرو کی پالیسی کوایک مثالی اتحاد سے ناکام کرکے دکھائیں گے۔ آل پاکستان ایمپلائز، پنشنرز و لیبر تحریک کی قیادت سرکاری ملازمین کی تنظیمات اور لیبر یونینز کے تمام گرفتار قائدین اور ملازمین کی رہائی کا پرزور مطالبہ کرتی ہے اور ایسے غیرجمہوری اقدامات کی شدید الفاظ میں مذمت کرتی ہے۔

سرکاری ملازمین اور مزدوروں کی گرفتاری اور ان کے احتجاج پر لاٹھی چارج و شیلنگ کے خلاف کل مورخہ 11 فروری 2021ء کو ملک بھر کے تمام اداروں میں ہڑتال اور تالہ بندی کی کال دے دی گئی ہے۔ ملازمین کے جائز حقوق کو دبانے کیلئے ریاستی جبر اور تشدد کے خلاف کل ملک بھر کے ملازمین ’’یوم سیاہ’’ کے طور پر منائیں گے اور تمام دفاتر پر سیاہ جھنڈے اور بینرز آویزاں کئے جائیں گے۔

رہبر تحریک نے تمام ممبر تنظیموں کے قائدین اور تمام ملازمین اور مزدوروں کو ’’یوم سیاہ‘‘ بھرپور انداز میں منانے اور ہڑتال کو کامیاب بنانے کی اپیل کردی ہے۔