پلندری: سکولز ٹیچرزآرگنائزیشن آزاد کشمیر کا احتجاجی پروگرام و مظاہرہ

رپورٹ:PTUDC پلندری

مورخہ 8 اکتوبر پائلٹ ہائی سکول پلندری میں سکولز ٹیچرز آرگنائزیشن کا آزادکشمیر کے تمام اضلاع میں احتجاجی پروگرامات کے سلسلے کا احتجاجی پروگرام منعقد ہوا۔ پروگرام میں سکول ٹیچرز آرگنائزیشن آزادکشمیر کے مرکزی صدر سردارعارف شاہین کے علاوہ ضلعی صدر سردارارشد اقبال و ضلعی کابینہ، تحصیل باڈیوں کے عہدیداران و نمائندگان کے ساتھ ساتھ اساتذہ کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔ احتجاجی پروگرام میں بیوروکریسی و حکومتی پالیسیوں پر شدید تنقید کرتے ہوئے یہ واضع کیا گیا کہ محکمہ تعلیم سے وابسطہ اساتذہ کے سکیل پاکستان کے مختلف صوبوں و گلگت بلتستان و آزادکشمیر میں یکساں نہیں ہیں جو کہ اساتذہ کے ساتھ زیادتی ہے۔ حکومتی اہلکاران و بیوروکریسی کے مختلف نمائندگان سے بارہا مزاکرات کیے جا چکے ہیں، لیکن ہر بار وہ غلط بیانی اور ٹال مٹول سے کام لیتے آئے ہیں۔ اساتذہ آزادکشمیر نے انصاف کے مقدس ایوانوں پہ بھی بار بار دستک دی لیکن ہر بار ان کے ساتھ بھونڈا مذاق کیا گیا ۔ اس وجہ سے آخری تدبیر کے طور پہ اساتذہ آزادکشمیر جن کی تعداد ( بشمول خواتین و مرد ) لگ بھگ 30 ہزار کے قریب ہے، نے احتجاج کا راستہ اپنایا ہے۔ مقررین کے مطابق اساتذہ کا اپنے حقوق اور زیادتیوں کے ازالے کیلیے سڑکوں پہ نکلنے پہ مجبور ہوجانا حکمرانوں کے لیے شرم کا مقام ہونا چاہیے۔ پروگرام سے پی ٹی یو ڈی سی کے ضلعی آرگنائزر سعد ناصر نے خطاب کرتے ہوئے سرمایاداری کے بحران کے اثرات اور محنت کش طبقے کے گرتے ہوئے معیار زندگی پہ روشنی ڈالی۔

پروگرام کے بعد پائلٹ ہائی سکول پلندری سے احتجاجی ریلی نکالی گئی جس کی قیادت مرکزی صدر سکولز ٹیچرز آرگنائزیشن آزادکشمیر سردار عارف شاہین نے کی۔ ریلی میں اساتذہ اپنے مطالبات کے حق میں نعرے لگاتے رہے۔ ریلی بازار کا چکر لگاتے ہوئے “کچہری چوک” پلندری میں پہنچ کر احتجاجی مظاہرے میں تبدیل ہو گئی۔ احتجاجی مظاہرے سے ضلعی صدر سردار ارشد اقبال و مرکزی صدر سردار عار شاہین کے علاوہ دیگر قائدین نے بھی خطاب کیا۔ واضع رہے کہ احتجاجی مظاہروں کا یہ سلسلہ 6 اکتوبر کو ضلع بھمبر سے شروع ہوا تھا۔ جس کے بعد میرپور، کوٹلی اور پلندری میں احتجاج ہو چکے ہیں۔ اسی طرح آزادکشمیر کے باقی اضلاع میں بھی احتجاجی مظاہروں کا پوسٹر جاری کیا جاچکا ہے۔ اس سلسلے کا آخری احتجاج آزادکشمیر کے دارلحکومت مظفرآباد میں 18 اکتوبر کو ہو گا ۔ اساتذہ کے مطالبات اگر تسلیم نہیں کیے جاتے تو مظفر آباد احتجاج میں پورے آزادکشمیر میں مکمل تعلیمی بائیکاٹ کا اعلان کیا جائے گا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*