کینیڈا: ٹورانٹو چڑیا گھر کے سٹاف کی ہڑتال

رپورٹ PTUDC  کینیڈا

 ٹورانٹو چڑیا گھر کے 400 محنت کشوں کی نمائندہ یونین  ’CUPE لوکل 1600‘ اور انتظامیہ کے نئے معاہدے پر مقامی ہوٹل میں 10 مئی کی شب  جاری مذاکرات انتظامیہ کی ہٹ دھرمی کی وجہ سے ناکام ہو گئے۔  مزدور یونین کی جانب سے کئی نکات پر لچک کا مظاہرہ کیا گیا مگرکم از کم سٹاف کی شق پر انتظامیہ نے لچک دکھانے سے انکار کر دیا۔  مذاکرات میں ڈیڈلاک آنے اور ہڑتال کی ڈیڈ لائن پر 11 مئی کی صبح سے چڑیا گھر کے تمام محنت کش ہڑتال پر چلے گئے جس کی وجہ سے انتظامیہ کوچڑیا گھر عوام کے لیے بند کرنا پڑا۔

ٹورانٹو چڑیا گھر نہ صرف یہاں کے شہریوں کے لیے ایک نہایت عمدہ فیملی تفریح گاہ ہے بلکہ یہ چڑیا گھر جانوروں پر تحقیق اور ان کی افزائشِ نسل کے لیے دنیا بھر میں سراہا جاتا ہے۔  یہاں موجود لگ بھگ 5000 قیمتی اور انتہائی نایاب جانوروں کی صحت اور دیکھ بھال پر تبصرہ کرتے ہوئے چڑیاگھر کی ترجمان نے دعویٰ کیا کہ جانوروں کی صحت کو کوئی خطرہ نہیں ہے۔  چڑیاگھر کے مینیجرز اور ڈاکٹر نہ صرف ان کے لیے خوراک تیار کر رہے ہیں بلکہ ان کی دیکھ بھال کی ذمہ داری بھی بخوبی ادا کر رہے ہیں۔ ہڑتال پر تبصرہ کرتے ہوئے ہوئے ترجمان کا کہنا تھا کہ مذاکرا ت کے دوران انتظامیہ کی جانب سے یونین کو بہت عمدہ معاہدہ کی پیشکش کی گئی مگر یونین نے کم از کم سٹاف کی شق پر لچک نہ دکھائی۔
چڑیا گھر ملازمین کی نمائندہ یونین ’CUPE لوکل 1600‘ کی صدر کرسٹین میکین زی نے ہڑتال اور مذاکرات کی ناکامی پر تبصرہ کرتے ہوئے بتایا کہ چڑیا گھر میں 5000 کے قریب جانور ہیں۔ جن میں سے اکثر کسی نہ کسی سٹاف ممبر سے ہی مانوس ہیں۔  بہت سے جانور زچگی سے ہیں۔  ان کی صحت کو انتظامیہ کی ہٹ دھرمی کی وجہ سے ہونے والی ہڑتال سے شدید خطرہ لاحق ہے۔  انتظامیہ دو دہائیوں سے کنٹریکٹ میں شامل کم از کم سٹاف کی شق کا خاتمہ چاہتی ہے۔ اس شق کی رو سے سٹاف میں کم از کم کل وقتی مستقل ملازمین کی تعداد 150 ہونا لازمی ہے جو جانوروں،  سٹاف اور سیاحوں کی حفاظت کے لیے بہت ضروری ہے۔  اس وقت کل وقتی مستقل ملازمین کی تعداد 183 ہے جبکہ 170 ایسے ملازمین ہیں جن کو سال بھر میں کسی خاص سیزن میں ہی طلب کیا جاتا ہے۔  ہم بہت سے خطرناک جانوروں کے ساتھ کام کرتے ہیں اور بہت سے خطرناک کام کرتے ہیں جیسے جانوروں کے خون کے نمونے اکٹھے کرنا ااوران کو طبی معائنے کی لیے بے ہوش کرنا۔  کم از کم سٹاف کی شق کے خاتمے پر بہت سے تجربہ کار مستقل ملازمین کی جگہ عارضی بھرتیاں کی جائیں گی،  جس سے جانوروں، ملازمین اور سیاحوں کی صحت اور حفاظت کو شدید خطرات لاحق ہو جائیں گے۔  اس شق کا خاتمہ ہم سب کے لیے خطرناک ہے۔
ہڑتال سے جانوروں کی صحت کو لاحق خطرے کے پیشِ نظر، یونین مذاکرات کی میز پر لوٹنے کو تیار ہے مگر دوسری جانب انتظامیہ کی ترجمان نے دو ٹوک الفاظ میں واضح کر دیا ہے کہ انتظامیہ نئے کنٹریکٹ میں کم از کم سٹاف کی شق کسی طور شامل نہیں کرے گی۔  چڑیا گھر کے ملازمین کے کنٹریکٹ میں کم از کم سٹاف کی شق کا خاتمہ گزشتہ کئی سالوں سے محنت کشوں کے حقوق پر جاری  حملوں کی ایک کڑی ہے جس میں ایک کے بعد ایک ادارے سے کل وقتی مستقل ملازمین کو برخواست کر کے ان کی جگہ وقتی عارضی ملازمین کی بھرتیاں کی جا رہی ہیں۔