Articles

کیریلیون اور نجکاری پالیسی کی بند گلی !

کیریلیون اور نجکاری پالیسی کی بند گلی !

May 27, 2018 at 2:35 pm 0 comments

جمہوری کنٹرول میں منصوبہ بند پیداوار ایک بند گلی نہیں، بلکہ انسانیت کا مستقبل ہے۔

بدحال زراعت کے نگہبانوں کے مسائل اور جدوجہد

بدحال زراعت کے نگہبانوں کے مسائل اور جدوجہد

March 31, 2018 at 10:03 pm 1 comment

کئی سالوں سے مسائل کا ایک انبھار بڑھتے بڑھتے اب زرعی معاونین کواحتجاج کی طرف لے آیا ہے۔

نجکاری کی نامرادی

نجکاری کی نامرادی

March 19, 2018 at 1:41 pm 0 comments

نجی شعبے میں محنت کشوں کے لئے ٹھیکیداری کے استحصال کے سوا کچھ نہیں ہے۔

پی آئی اے کی نجکاری کی دوبارہ سازش

پی آئی اے کی نجکاری کی دوبارہ سازش

March 17, 2018 at 6:00 am 0 comments

محنت کشوں کو پوری معیشت کے جمہوری کنٹرول کی لڑائی لڑنا ہو گی تاکہ ذرائع پیداوار کو سرمایہ داروں کی منافع خوری کی بجائے عام انسانوں کی ترقی کے لئے استعمال کیا جا سکے۔

ترکی میں مزدور جدوجہد کا ماضی اور حال

ترکی میں مزدور جدوجہد کا ماضی اور حال

March 15, 2018 at 6:00 am 0 comments

ترکی میں محنت کش طبقے کی جدوجہد کا آغاز سلطنت عثمانیہ میں سرمایہ دارانہ نظام کے ارتقا کے متوازی ہوا۔

کسان لانگ مارچ: نجاتِ دیدہ و دل کی گھڑی نہیں آئی!

کسان لانگ مارچ: نجاتِ دیدہ و دل کی گھڑی نہیں آئی!

March 13, 2018 at 12:49 pm 0 comments

سرکار کی جانب سے اس معاہدے پر عمل درآمد کرنا باقی رہتا ہے۔

چائلڈ لیبر:  بچوں کا بدترین استحصال

چائلڈ لیبر: بچوں کا بدترین استحصال

February 17, 2018 at 12:00 am 0 comments

یہ لاکھوں بچے جو چائلڈ لیبر کہلاتے ہیں، سڑکوں ، دکانوں سے لے کر گھروں تک میں اذیت بھری زندگی بسر کر رہے ہیں۔

حرفِ حق دل میں کھٹکتا ہے جو کانٹے کی طرح

حرفِ حق دل میں کھٹکتا ہے جو کانٹے کی طرح

January 20, 2018 at 12:38 pm 0 comments

کون پاکستان برائے فروخت کا بورڈ اس حکومت اور بیورو کریسی کے گلوں سے اتارے گا۔

چنگاری، شعلے میں بدلے گی!

چنگاری، شعلے میں بدلے گی!

January 11, 2018 at 12:00 am 0 comments

مزدور اگراپنے جمودکی زنجیروں کو توڑ کر نکل پڑا تو پھر پولیس تو کیا، پوری ریاست کا جبربھی اسے آگے بڑھنے سے نہیں روک سکے گا۔

اکنامک زونز: محنت کے بدترین استحصالی مراکز ؟

اکنامک زونز: محنت کے بدترین استحصالی مراکز ؟

November 4, 2017 at 8:00 am 0 comments

اتھارٹی کے قوانین کے مطابق ان زونز میں پاکستان کے لیبر قوانین مثلاًصنعتی تعلقاتی آرڈیننس کا اطلاق نہیں ہوتا، اس لئے یہاں پر کسی قسم کے حقوق کا سوال کرنا بھی غیر قانونی ہے۔