لاہور: ’راوی آٹوز ‘ میں مزدور محمد رضوان کے بہیمانہ قتل اور تنخواہوں کی بندش کے خلاف جلسہ

رپورٹ: PTUDC لاہور

لاہور کے نزدیکی علاقہ بیگم کوٹ میں واقعہ سپیئر پارٹس بنانے والی فیکٹری’راوی آٹوز‘ میں مورخہ 17فروری کو چھ ماہ کی تنخواہوں کا مطالبہ کرنے اور جبری بر طرفیوں کے خلاف مزدوروں کے احتجاج پر گولیاں چلا دیں جس کی زد میں آکر محمد رضوان نامی مزدور موقع پر ہی جاں بحق ہو گیا۔اس کے قتل کا مقدمہ فیکٹری مالکان اور دیگر مسلح افراد کے خلاف درج ہوا تھا لیکن ابھی تک نامزد ملزمان گرفتار نہیں ہوسکے۔ مزدوروں کی تنخواہوں کی بندش جاری ہے اور فیکٹری کو بند کر دیا گیا ہے۔ لیکن اس قتل کے خلاف اٹھنے والی تحریک جاری ہے اس سلسلے میں مزدوروں نے پہلے شیخوپورہ روڈ پر احتجاج منظم کیا اور پریس کلب لاہور کے سامنے مقتول محمد رضوان کی غائبانہ نماز جنازہ بھی ادا کی گئی۔ فیکٹری میں 1200 کے قریب محنت کش کام کرتے ہیں جنہوں نے باقاعدہ طور پر جدوجہد کے بعد اپنی ٹریڈ یونین پاکستان ورکرز یونین راوی آٹوز CBA بھی رجسٹرڈ کروائی ہے۔

اس تحریک میں اہم سنگ میل کے طور پر مورخہ 10مارچ کو فیکٹری گیٹ پر 18سے زائد مزدور تنظیموں نے مل کر احتجاجی جلسہ کا اہتمام کیا جس میں شیخوپورہ روڈ کی مختلف فیکٹریوں کے محنت کشوں نے بھی بڑی تعداد میں شرکت کی۔ جلسہ کے دوران مقررین نے حکومت کی بے حسی پر تنقید کرتے ہوئے محنت کشوں کی اس لڑائی کو منطقی انجام تک لڑنے کا عہد کرتے ہوئے مطالبہ کی کہ ملزمان فوری طور پر گرفتار کئے جائیں اور محنت کشوں کے واجبات فی الفور ادا کئے جائیں۔ اس جلسہ عام میں حقو ق خلق موومنٹ HKMکے رہنماعمار علی جان، پراگریسیو سٹوڈنٹس کلیکٹوPSCسے ایاز، فیروزوالا لائرز فورم سے ایاز سندھو ایڈووکیٹ اور پاکستان ٹریڈ یونین ڈیفنس کمپیئن PTUDC سے عمر شاہد نے شرکت کی اور محنت کشوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کا اعلان کیا گیا۔ تمام حاضرین اور مزدور رہنماؤں نے اس لڑائی کو پاکستان اور دنیا بھر کے محنت کشوں کی لڑائی کے ساتھ جوڑتے ہوئے سرمایہ دارانہ نظام کے خاتمہ تک جدوجہد جاری رکھنے کے عزم کا عیادہ کیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*