کراچی: پاکستان اسٹیل ملز میں جبری برطرفیوں اور نجکاری پالیسی کے خلاف احتجاجی ریلی

رپورٹ: PTUDC اسٹیل ملز

آل ایمپلائز ایکشن کمیٹی پاکستان اسٹیل ملز کی جانب سے ملازمین کی جبری برطرفیوں، پاکستان سٹیل کی نجکاری اور ریٹائرڈ ملازمین سے ٹائون شپ کے مکان جبری خالی کروانے کے خلاف مورخہ 26 نومبر کو عظیم الشان ریلی کا انعقاد کیا گیا، ریلی کا آغاز L-9 مارکیٹ گلشن حدید فیز II سے ہوا جبکہ یہ مختلف راستوں سے ہوتی ہوئی اللہ والی چورنگی اسٹیل ٹاؤن پر اختتام پذیر ہوئی جہاں اس نے جلسہ عام کی شکل اختیار کر لی۔ احتجاجی ریلی میں ہزاروں ملازمین نے اپنی اہل خانہ کے ساتھ بھرپور شرکت کی۔ ریلی کے شرکا نے حکومت اور انتظامیہ اسٹیل ملز کے خلاف سخت نعرے بازی کی جبکہ ریلی کے دوران مصلحت نہیں صرف جدوجہد کا نعرہ بلند کیا گیا جو کہ اسٹیل ملز کے ملازمین کے جذبات کی غمازی کرتا ہے۔ اس ریلی نے حکمران طبقے کو واضح پیغام بھجوایا کہ اسٹیل ملز کے ملازمین زندہ ہیں اور وہ اپنے روزگار اور ادارے کے تحفظ کے لئے کسی بھی حد تک جانے کا تیار ہیں۔ ریلی سے اظہار یکجہتی کے لئے انجمن تاجران اسٹیل ٹاؤن اور گلشن حدید نے مکمل شٹر ڈاؤن کیا۔

 آل ایمپلائز ایکشن کمیٹی کی سپریم کونسل کے ممبران نے اللہ والی چورنگی پر شرکا سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ  اسٹیل ملز انتظامیہ جبری برطرفی کے فیصلے سے باز رہے۔ آج کی ریلی نے ثابت کیا کہ اسٹیل ملز کے ملازمین نے جبری برطرفیوں کی پالیسی مسترد کردی ہے، اورغیر قانونی برطرفیاں آئین و قانون کی خلاف ورزی ہے۔ ہم جدوجہد کا سلسلہ جاری رکھیں گے اور اس لڑائی میں دیگر اداروں کے محنت کشوں کو شامل کرتے ہوئے نجکاری پالیسی اور جبری برطرفیوں کا سلسلہ بند کروائیں گے۔