خیرپور میرس: اسٹیل ملز سے محنت کشوں کی جبری برطرفیوں اور نجکاری پالیسی کے خلاف احتجاجی مظاہرہ

رپورٹ:  PTUDC  خیرپورمیرس

پاکستان ٹریڈ یونین ڈیفنس کمپئین PTUDC کی جانب سے مورخہ 6 جنوری بروز بدھ پریس کلب خیرپور میرس کے سامنے اسٹیل ملز کے ملازمین کی جبری برطرفیوں اور مجوزہ نجکاری کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کا انعقاد کیا گیا۔ مظاہرے میں مختلف مزدور تنظیموں کے ساتھ وکلا کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔ مظاہرین نے پلے کارڈز اٹھا رکھے تھے، جن پرآئی ایم ایف، ورلڈ بینک اور حکومت کی مزدور دشمن پالیسیوں کے خلاف نعرے درج تھے۔ احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے ہوئے مقررین نے کہا کہ 2008ء تک منافع بخش ادارے کو جان بوجھ کر ان ملٹی نیشنل کمپنیوں کے دلال حکمرانوں نے برباد کر دیا۔ 10 جون 2015 کو اس کی پیداوار کو مکمل طور پر بند کر دیا گیا۔ 

کورونا وبا کے دوران جب پہلے ہی روزگار کے مواقع تیزی سے ختم ہو رہے ہیں، محنت کش طبقہ معاشی بدحالی کا شکار ہو رہا ہے۔ اس وفاقی حکومت نے اسٹیل ملز کے 4500 سے زائد ملازمین کو فارغ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ جس عمل کی  PTUDC سخت الفاظ میں مذمت کرتی ہے۔ پی ٹی یو ڈی سی مطالبہ کرتی ہے کہ ان ملازمین کو بحال کیا جائے اور اسٹیل ملز کو دوبارہ چلایا جائے۔

احتجاجی مظاہرے سے پی ٹی یو ڈی سی سندھ کے صدر کامریڈ انور پنہور، شہباز پھلپوٹو، امجد لاشاری، سعید خاصخیلی، مختیار خمیسانی، فراز رڈ، شاہنواز ڈہوٹ، اور دیگر نے خطاب کیا۔