8 اکتوبر کو ’چوتھی عالمی رائیڈرز ہڑتال‘ پر عالمی سوشلسٹ لیگ کا اعلامیہ

8 اکتوبرکو دنیا بھرمیں اوبر، اوبرایٹس، اوڈرز یا، راپی، گلووو، آئی فوڈ، ڈلیوروو، لیفٹ اور ڈیش جیس ٹیکنالوجی کمپنیوں کے محنت کش کام چھوڑ ہڑتال کر رہے ہیں، ان کا بنیادی مطالبہ ان کو آزاد ٹھیکیدار یا بزنس پارٹنر کی بجائے ’محنت کش‘تسلیم کئے جانا اور تمام لیبر قوانین کے تحت ان کی ملازمتوں کا تحفظ ہے۔ پاکستان میں بھی فوڈ پانڈا، اوبر، کریم، ایئرلفٹ اور دیگر کمپنیوں کے محنت کش بھی انہی مطالبات کے گرد سراپا احتجاج ہیں۔ پاکستان ٹریڈ یونین ڈیفنس کمپئین PTUDC ان تمام محنت کشوں کی جدوجہد کے ساتھ ہے اور ہم 8 اکتوبر کی عالمی ہڑتال کی حمایت کا اعلان کرتے ہیں۔ (Read Original)

8 اکتوبر کو ایک بار پھر دنیا کے 12 سے زائد ممالک میں ڈلیوری اورایپ بیس محنت کشوں کا اتحادنظر آئے گا۔ 8 اکتوبر کی تاریخ کوئی اتفاق نہیں بلکہ اسے ایک خاص حکمت عملی تحت منتخب کیا گیا ہے ۔ ہم مزدوروں کی کیلیفورنیا (AB 5 (USA قانون کے تحفظ کے لیے اس لڑائی میں شانہ بشانہ کھڑے ہیں، جس کے تحت ہزاروں ایپ بیس ورکرزکو ملازم تسلیم کیا جائے گا۔ کیلیفورنیا کے لوگ 6 اکتوبرسے بذریعہ ڈاک وو ٹنگ کا آغاز کرنے جا رہے ہیں اور ہم  ان سے درخواست کرتے ہیں وہ شق نمبر 22 پر’نہیں‘ ووٹ کرکے اوبر، لیفٹ اور ڈورڈیش جیسی کمپنیوں کے محنت کشوں پر اس حملے کو ناکام بنائیں جس پریہ اب تک 180 ملین ڈالر خرچ کر چکی ہیں۔ اس لڑائی میں جیت ایک ایسی مثال قائم کرے گی جو پوری دنیا میں محنت کشوں کی جدوجہد کو تقویت پہنچائے گی۔

8 اکتوبر کو ہم اوبر، اوبر ایٹس، اوڈرز یا، راپی، گلووو، آئی فوڈ، ڈلیوروو، لیفٹ اور ڈیش کے خلاف جاپان سے امریکہ تک، جرمنی سے فرانس تک، سپین اور اٹلی میں، میکسیکو سے لاطینی امریکہ سمیت ایکواڈور، کولمبیا، کوسٹاریکا، برازیل، چلی اور ارجنٹینا میں ایک مشترکہ ردعمل سامنے آئے گا۔

آجر ملٹی نیشنل کمپنیاں ہیں، استحصال عالمی ہے، اس لیے یہ جنگ بین الا قوامی ہے!

ہم ان کمپنیوں کی طرف سے ایک لچکدار لیبر ماڈل کے نفاذ کی کوششیں دیکھ رہے ہیں جو دنیا بھر کے محنت کشوں کی جدوجہد سے حاصل کیے گئے حقوق کے لیے ایک دھچکا ہوگا۔ اس نئے لیبر باڈل کی بنیاد، مالکوں کی طرف سے ٹیکنالوجی کی بنیاد پر لاکھوں مزدوروں کی آمدنی پرکٹوتیاں کر کے اپنے منافعوں میں بڑھوتر ی پر کھڑی ہے۔اس کے ساتھ ساتھ ریاستوں کی جانب سے قانون سازی کے ذریعے محنت کشوں کی زندگیوں کومزید مشکل بنایا جا رہا ہے۔

کورونا وبا نے ایپ بیس و رکرز کے روزگا ر کی مشکلات میں کئی گنا اضافہ کردیا ہے۔ ہزاروں کی تعداد میں ہمارے ساتھی کمپنیوں کی طرف سے حفاظتی اقدامات نہ ہونے کے باعث اس وبا کا شکار ہوئے ہیں۔

برازیل، کولمبیا، میکسیکو، کیلیفورنیا اور دنیا کے دیگر ممالک میں پنپنے والی زبردست جدوجہد اس چوتھی بین الاقوامی ہڑتال کے لئے حالات تیارکیے ہیں۔

ہم کولمبیا کی پولیس اور دیگر قانون نافذ کرنے ولے اداروں کی جانب سے محنت کشوں پر کیے جانے والے جبر کی مذمت کرتے جس میں اب تک 13 افراد مارے جا چکے ہیں، جن میں سے دو ڈلیوری ورکر ہیں۔ اسکے ساتھ ساتھ ہم کولمبیا کے محنت کشوں کی اپنے صدرڈوکس کے خلاف جدوجہد کے ساتھ اظہار یکجہتی کرتے ہیں جو اس بحران کا تمام تر بوجھ محنت کشوں پر ڈالنا چاہتا ہے۔ ہم ان تمام مزدور دشمن ضوابط کو مسترد کرتے ہیں، جن کو ارجنٹینا، کولمبیا اور دوسرے ممالک کی حکومتیں نافذ کرنے کا ارادہ رکھتی ہیں۔ ان قوانین کے ذریعے محنت کشوں کو دھوکا دے کر ان کے لیے کام کرنے کی شرائط کو مزید مشکل بنایا جا رہا ہے۔ ہم اٹلی میں پلیٹ فارمز کے ذریعہ دستخط شدہ جھوٹے معاہدے کی مذمت کرتے ہیں۔ ایک ایسا معاہدہ جس کے ذریعے ڈرائیوروں کے کام کرنے کے حالات کو بتر بنایا جا رہا ہے۔

٭8 اکتوبر کو ہم علم بغاوت بلند کرتے ہوئے ملازمین کی شناخت کا مطالبہ کریں گے، ہم آزاد ٹھیکیدار نہیں ہیں، ہم محنت کش ہیں! ہم اپنی آمدنی میں اضافے کے لئے لڑ رہے ہیں جو دو سال سے زیادہ عرصے سے منجمدہے یا زیادہ سنگین حالات میں کمپنیوں نے یکطرفہ ان میں کٹوتی کی ہے۔

٭ ہم درجہ بندی کے نظام کو مسترد کرتے ہیں جو ورکرزکے مابین مہلک مقابلے کی حوصلہ افزائی کرتا ہے۔

٭ ہم ایپ پر مبنی ٹیکنالوجی کمپنیوں سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ مزدوروں کو بہتر معاوضہ اورمیڈیکل کی سہولیات فراہم کریں۔ ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ کمپنیاں ان محنت کشوں کو کام کے معیاری سازوسامان کی فراہمی، حادثات سے تحفظ، ہسپتال میں داخل کے وقت بلا معاوضہ دیکھ بھال یقینی بنائی جائے۔ ہم بیماری، حادثات اورمیٹرنٹی کے دوران بمعہ تنخواہ رخصت کا مطالبہ کرتے ہیں۔

٭ بلاجواز پابندیوں کوختم کیا جائے، ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ بغیر کسی پابندی کے احکامات کو مسترد کرنے کا حق دیا جائے۔

٭ ہم دوران ملازمت وفات پانے والے ساتھیوں کے لواحقین کے لئے انصاف اور معاوضے کا مطالبہ کرتے ہیں۔
آئیے ایپ بیس ورکرز کو محنت کشوں کی عالمی تحریک کے ساتھ جورتے ہوئے تنظیم اور طبقاتی اتحاد کو مضبوط بنائیں تاکہ ہم ایک مٹھی بن کراپنے حقوق کا دفاع کر سکیں۔

مزدوروں کی بین الاقوامی جدوجہد زندہ باد !
8 اکتوبر کو ایپ ورکرز کی عالمی ہڑتال زندہ باد !

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*