کراچی: فلسطین کے محنت کشوں ساتھ اظہار یکجہتی کے لئے احتجاجی مظاہرہ

رپورٹ: فیاض

مورخہ 18 مئی بروز منگل فلسطین کے محنت کشوں ساتھ اظہار یکجہتی کے لئے پاکستان ٹریڈ یونین ڈیفنس کمپئین PTUDC، انقلابی طلباء محاذ (RSF) اور جموں کشمیر نیشنل سٹوڈنٹس فیڈریشن (JKNSF) کے زیر اہتمام کراچی پریس کلب پر ایک احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔ جس میں شہر کی دیگر مزدور تنظیموں، طالب علموں، وکلاء اور دیگر شعبہ زندگی کے افراد نے شرکت کی۔ آج کا یہ مظاہرہ اس کال کا تسلسل ہے جو PTUDC کی مرکزی باڈی نے ملکی اور بین الاقوامی طور پر دی ہے۔

شرکا نے اسرائیلی جارحیت کی پرزور مذمت کی اور اقوام متحدہ کو بھی کڑی تنقید کا نشانہ بنایا۔ مقررین نے بتایا کہ کس طرح سلامتی کونسل امریکی سامراج کی کاسہ لیسی کرتی رہی ہے اور غزہ میں معصوم شہریوں کا قتل عام جاری رہا جس میں عورتوں اور بچوں کی بڑی تعداد شامل ہے جو جنگی جرائم میں آتا ہے۔ مقررین نے اقوام متحدہ کو بقول لینن چوروں کا باورچی خانہ قرار دیا۔ میڈیا کے دفاتر اور کرونا کی واحد ٹیسٹنگ لیبارٹری کو نشانہ بنانے کی مذمت کی گئی۔

مقررین میں PTUDC کے سابق مرکزی صدر ریاض حسین بلوچ، KUL کے عامر جمالی، نیشنل لیبر کونسل کے کرامت علی، JKNSF کے مرکزی رہنماء ارسلان شانی، RSF کے مرکزی رہنماء فیاض چانڈیو، PC ہوٹل یونین کے جنرل سیکرٹری غلام محبوب اور صدر عبید خان، NTUF سے ناصر منصور، HBWF سے زہرہ اکبر، کوٹ ورکرز سے عالم ایوب، شو میکرز سے کامریڈ منو اور دیگر شامل تھے۔ آخر میں PTUDC کے مرکزی رہنماء جنت حسین نے شرکا کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ 14 مئی بروز جمعہ اٹلی کی بندرگاہ کے محنت کشوں نے اسرائیل کی اسلحہ کھیپ کو بحری جہاز پر لوڈ کرنے سے انکار کر کے یہ ثابت کیا کہ یہ لڑائی صرف طبقاتی بنیادوں پر لڑی اور جیتی جا سکتی ہے۔ فلسطین کی آزادی صرف اور صرف مشرق وسطیٰ کے محنت کشوں کو طبقاتی بنیادوں پر جوڑتے ہوئے سوشلسٹ فیڈریشن کے قیام میں ہی ممکن ہے۔