آزادی صحافت اور صحافیوں کے حقوق کےتحفظ کے لئے کوئٹہ تا اسلام آباد لانگ مارچ ہو گا، پی ایف یو جے

رپورٹ: PTUDC لاہور

صحافیوں کی تنظیم پاکستان فیڈرل یونین آف جرنلسٹس (پی ایف یو جے) کی جانب سے  صحافیوں کے حقوق، آزادی صحافت اور آزادی اظہار رائے کے لیے کوئٹہ تا اسلام آباد لانگ مارچ کے لئے بھرپور تیاریوں کا آغاز کیا جا چکا ہے۔ پی ایف یو جے کے مطالبات براہ راست وفاقی اور صوبائی حکومتوں سے ہیں جن کی آشیرواد سے میڈیا مالکان صحافیوں، اخباری کارکنوں اور دیگر میڈیا ورکرز پر ظلم کے پہاڑ توڑ رہے ہیں، وفاقی اور صوبائی حکومتوں کی جانب سے میڈیا ہاوسز کے مالکان کو کھلی چھوٹ دی گئی ہے۔ ملک میں 7 ہزار سے زائد صحافیوں کی جبری برطرفیوں کی ذمہ دار بھی وفاقی اور صوبائی حکومتیں ہیں اسی لیے پی ایف یو جے نے ملک گیر تحریک شروع کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ پی ایف یو جے نے کوئٹہ سے لانگ مارچ کے آغاز کے لیے 5 اپریل 2021 کی تاریخ طے کی ہے اور لانگ مارچ کے شرکا 6 اپریل 2021 کو کوئٹہ سے کراچی پہنچیں گے جبکہ حیدر آباد، سکھر، رحیم یار خان اور ملتان سے ہوتے ہوئے 10 اپریل کو لانگ مارچ لاہور پہنچے گا۔

لاہور میں آج  صدر پی یوجے قمرالزمان بھٹی، جنرل سیکرٹری خواجہ آفتاب حسن، نائب صدر محمد طابر، خزانچی ندیم شیخ اور سینئر جوائنٹ سیکرٹری عطیہ زیدی نے لاہور پریس کلب میں پاکستان ٹریڈ یونین ڈیفنس کمپئین کے عمر شاہد اور طلبہ تنظیم آر ایس ایف کے عماریاسر کے مابین پریس کلب لاہور میں مشاورتی اجلاس منعقد کیا گیا، جبکہ حقوق خلق موومنٹ کے ڈاکٹرعمار جان سے ٹیلی فون پر مشاورت کی گئی۔

اجلاس میں 5 اپریل کو کوئٹہ سے لانگ مارچ کے آغاز پر لاہور پریس کلب کے باہر احتجاجی کیمپ لگانے اور روزانہ کی بنیاد پر کیمپ میں دو گھنٹے سہ پہر 3 سے 5 بجے تک احتجاج کا فیصلہ کیا گیا، جبکہ لانگ مارچ کے شرکا کا لاہور آمد پر ٹھوکر نیاز بیگ پر بھرپور استقبال کرنے اور ریلی کی شکل میں لاہور پریس کلب تک لانے کا لائحہ عمل تیار کیا گیا۔

اس ضمن میں مختلف ٹریڈ یونین تنظمیوں سے رابط تیز کرنے اور صحافتی اداروں میں پیر سے رابط مہم شروع کرنے پر بھی اتفاق کیا گیا۔