اسلام آباد: ہسپتالوں کی نجکاری اور ایم ٹی آئی ایکٹ کے خلاف ملازمین کے ساتھ شانہ بشانہ لڑیں گے، مزدور رہنماؤں کا اعلان

رپورٹ: سجاد حسین ساجد، میڈیا کوآرڈینیٹر آل پاکستان ایمپلائز پنشنرز و لیبر تحریک

پاکستان انسٹیٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز (پمز) اسلام آباد جیسے قومی ادارے کی نجکاری، ایم ٹی آئی، پی ایم سی ایکٹ کے نفاذ اور آئی ایم ایف کے دباؤ پر دیگر ملازم اور عوام دشمن اقدامات کے خلاف ہسپتال کے میڈیکل اور پیرامیڈیکل سٹاف کا احتجاج شدت اختیار کر گیا۔ گزشتہ روز آل پاکستان ایمپلائز پنشنرز و لیبر تحریک، پاکستان ٹریڈ یونین ڈیفنس کمپئین PTUDC اور پیپلز لیبر بیورو کے رہنماؤں سمیت دیگر کئی مزدور تنظیموں کے نمائندگان نے پمز کے احاطے میں ہسپتال ملازمین کے احتجاجی مظاہرے میں شرکت کی۔

اس موقع پر پیپلز لیبر بیورو سنٹرل پنجاب کے صوبائی صدر اور پاکستان فوڈ ورکرز فیڈریشن کے مرکزی صدر سید نذر حسین شاہ، یونیورسل سٹاف آرگنائزیشن ریڈیو پاکستان سی بی اے کے جنرل سیکرٹری اور پی ایل بی پنجاب کے نائب صدر محمد اعجاز، ایچ بی ایف سی ورکمین یونین پاکستان کے صدر اور پی ایل بی کے صوبائی ڈپٹی جنرل سیکرٹری راجہ پرویز اختر، سی ڈی اے لیبر یونین (سی بی اے) کے ڈپٹی جنرل سیکرٹری اور پی ایل بی ضلع اسلام آباد کے صدر راجہ اشتیاق احمد، پاک پی ڈبلیو ڈی اتحاد یونین کے جنرل سیکرٹری اور پی ایل بی کے سٹی صدر سید محمد ذیشان شاہ، میونسپل لیبر یونین میٹرو پولیٹن کارپوریشن راولپنڈی کے جنرل سیکرٹری راجہ عبدالمجید، آل پاکستان ورکرز یونین (سی بی اے) یوٹیلٹی سٹورز کارپوریشن کے مرکزی چیئرمین سید عارف حسین شاہ، PTUDC کے مرکزی جوائنٹ سیکرٹری اور آل پاکستان ایمپلائز پنشنرز و لیبر تحریک کے کوآرڈینیٹر ڈاکٹر چنگیز ملک، اتحاد ورکرز یونین آف او جی ڈی سی ایل ایمپلائز (سی بی اے) کے ڈپٹی جنرل سیکرٹری انصر ایوب وڑائچ، ایمپلائز یونٹی سول ایوی ایشن کے صدر راجہ آصف، پیپلز ورکرز یونین پاکستان اسٹیل ملز کے رہنما خاور قریشی اور پی ٹی ڈی سی ایمپلائز یونین کے صدر ماجد یعقوب اعوان سمیت دیگر کئی راہنماؤں نے خطاب کیا اور پی ٹی آئی حکومت کے جابرانہ و ظالمانہ ایکٹ اور ملازم و عوام دشمن پالیسیوں کیخلاف پمز ہسپتال کے ملازمین کے ساتھ اظہار یکجہتی کرتے ہوئے اُن کی جدوجہد اور تحریک میں اپنے بھرپور تعاون کا یقین دلایا۔

مزدور رہنما سید نذر حسین شاہ نے پیپلز لیبر بیورو کی جانب سے پمز کے احتجاجی ملازمین کے مطالبات کی مکمل حمایت کرتے ہوئے ان سے اپیل کی کہ وہ اپنی صفوں میں اتحاد برقرار رکھیں اور موجودہ جابرانہ سرمایہ دارانہ نظام بدلنے کیلئے جدوجہد جاری رکھیں۔ جب یہاں ایک عوام دوست اور مزدور دوست حکومت ہو گی، تو آپ کو اپنے حقوق کیلئے در بدر کی ٹھوکریں نہیں کھانی پڑیں گی۔

اس موقع پر تھیلیسیمیا کی بیماری میں مبتلا ایک بچی نے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم عمران خان سے مطالبہ کیا کہ وہ پمز ہسپتال کو پرائیویٹ نہ کریں اور سرکاری ہی رہنے دیں تاکہ غریب مریض اپنا علاج کراتے رہیں۔