پی ٹی وی ملازمین ملازمتوں اور مراعات کے تحفظ کے لیے آخری دم تک لڑیں گے، یونین عہدے داران

رپورٹ: PTUDC کوئٹہ

پاکستان ٹریڈ یونین ڈیفنس کمپئین PTUDC کے وفد نے مرکزی چیئرمین نذرمینگل کی قیادت میں پاکستان ٹیلی ویژن کے یونین آفس کا دورہ کیا اور یونین عہدیداروں سے ملاقات کی، جس میں پی ٹی وی کے محنت کشوں کی موجودہ صورت حال اور حکومت کے مزدور دشمن اقدامات پر بات ہوئی۔ اس دوران یونین عہدیداروں نے بتایا کہ اس وقت حکومت نے پی ٹی وی میں جنگل کا قانون بنایا ہوا ہے اور ہر دن ملازمین کے خلاف مزدور دشمن احکامات جاری کیے جاتے ہیں۔ ملازمین کی تمام مراعات کو ایک ایک کرکے ختم کیا جارہا ہے۔ پی ٹی وی کی اپنی انتظامیہ اور دیگر حاضر سروس اہلکاروں کی موجودگی میں باہر سے افسران کو کنٹریکٹ پر بھرتی کرکے محکمے پر براجمان کیا جا رہا ہے، جن کو پندرہ لاکھ روپے ماہانہ تنخواہ دی جاتی ہے۔ جبکہ دیگر مراعات اس کے علاوہ ہے۔ جس سے ادارے پر اضافی اخراجات آرہے ہیں۔ دوسری طرف 35 سال سے زائد عرصہ سروس کرنے کے باوجود ان ملازمین سے دوبارہ انٹرویو لیا جارہا ہے۔ پروموشن کے لیے ٹیسٹ اور انٹرویو کی پالیسی بنائی گئی ہے۔ ایسے ملازمین جو دو سال پہلے ریٹائر ہوچکے ہیں انہیں تاحال گریجوٹی نہیں دی گئی ہے۔ ہاﺅس ریکوزیشن کو ختم کردیا گیا ہے۔ ادارے میں اعلیٰ بیوروکریسی کی کرپشن اپنے عروج پر ہے۔ تبدیلی سرکار نے ادارے میں اصلاحات کے نام پر اسے برباد کردیا ہے جس کا تمام تر بوجھ ملازمین پر لادا جا رہا ہے۔

ادارے میں ان مزدور دشمن اقدامات کے خلاف کسی طرح کے احتجاج کو روکنے کے لیے پی ٹی وی میں لازمی سروس ایکٹ لاگو کیا گیا ہے۔ یونین عہدیداروں نے مزید کہا کہ ادارے کی تمام تر تباہی حکمرانوں اور بیوروکریسی کی وجہ سے ہے۔ ہم ملازمین کے نوکریوں اور مراعات کے تحفظ کے لیے آخری دم تک لڑیں گے۔ PTUDC کے وفد نے پی ٹی وی ملازمین کے ساتھ ہونے والے ظلم اور مزدور دشمن اقدات کی شدید مذمت کی اور پی ٹی وی ملازمین کی جدوجہد میں انہیں مکمل حمایت کا یقین دلایا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*