بلوچستان کے سرکاری ملازمین اور محنت کشوں کے پرامن احتجاج پر ریاستی تشدد کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہیں، پی ٹی یو ڈی سی

تحریر: مرکزی انفارمیشن بیورو

بلوچستان ایمپلائز اینڈورکرز گرینڈ الائنس، صوبہ بھر کے سرکاری ملازمین اور محنت کشوں کی تنظیموں پر مبنی اتحاد ہے جو کہ بلوچستان کے تمام محنت کشوں کے حقوق کی خاطر سرگرم عمل ہے۔ آج مورخہ 15مارچ کو گرینڈ الائنس کی جانب سے اپنے مطالبات کے لئے صوبہ بھر میں احتجاج کی کال دی تھی۔ صوبہ کے تمام 33اضلاع میں الائنس کی جانب سے کامیاب احتجاجی مظاہروں کا انعقاد کیا گیا۔ ان مظاہروں میں خواتین کی بڑی تعداد نے شرکت کی اور انہوں نے ہراول دستے کا کردارادا کیا۔

بلوچستان حکومت کی جانب سے مطالبات پورے کرنے یا ملازمین کے مسائل حل کرنے کے لئے مذاکرات کی بجائے ظالمانہ فسطائی عمل اختیار کرتے ہوئے ان کے احتجاج کو کچلنے کے لئے لاٹھی چارج اور گیس شیلنگ کا استعمال کیا گیا۔ گرینڈ الائنس کی جانب سے جاری اعلامیہ میں کہا گیا ہے کہ، ’ملازمین پر تشدد، لاٹھی چارج اور شیلنگ صوبے کی روایات کو کچلنے کا بے حسی پر مبنی قدم ہے،حکمران خواتین اور ملازمین کی بیداری،شعوری جدوجہد اور اپنے حقوق سے آگاہی سے خوفزدہ ہے۔ اس ریاستی طاقت کے نشے اور زعم میں کیے جانے والے تشدد سے کئی ملازمین کی حالت غیر ہوئی حتی کہ تین ملازم شدید زخمی ہو کر ہسپتال تک پہنچے۔ حکومت کی طرف سے ملازمین کی پرامن ریلی پرتشدد خواتین کی بے حرمتی اور روایات کے پامالی کے خلاف گرینڈ الائنس کل مورخہ 16 مارچ بروز بدھ بلوچستان کے تمام اداروں اور دفاتر میں اس ظلم کے خلاف کام اور قلم چھوڑ ہڑتال کا اعلان کرتی ہے۔ گرینڈ الائنس کی ایگزیکٹ کونسل کا اجلاس 17مارچ کو شام 5 پرنس روڈ کوئٹہ میں طلب کیا گیا ہے۔جس میں 24 مارچ کو پورے بلوچستان کے ملازمین کی طرف مارچ کرنے اور وزیر اعلی ہاؤس کے گھیراؤ کیلئے حکمت عملی طے کی جائیگی‘۔

پاکستان ٹریڈ یونین ڈیفنس کمپئین PTUDC، بلوچستان حکومت کے فسطائی طرز عمل کی بھرپور مذمت کرتے ہوئے ملازمین اور محنت کشوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کا اظہار کرتی ہے۔ پولیس گردی سے حکومت نے واضح طور پر مزدور دشمنی کا ثبوت دیا ہے، عالمی سامراجی اداروں کی تابعداری میں حکومت ہر حد سے گزرنے کے لئے تیار ہے۔ ریاست کے پاس سرمایہ داروں کو نوازنے کے لئے بہت پیسہ ہے جبکہ عام محنت کش کے لئے کوئی فنڈ دستیاب نہیں، بڑھتی ہوئی مہنگائی کی وجہ سے جینا بہت مشکل ہو چکا ہے۔ معاشی مسائل میں گھرے محنت کشوں کو ریلیف دینے کی بجائے انہیں لاٹھیاں اور گولیاں دیں جا رہی ہیں۔ PTUDC گرینڈ الائنس کی 16مارچ کی قلم چھوڑ ہڑتال اور 24مارچ کو سی ایم ہاؤس کے گھیراؤ کی حمایت کرتے ہوئے، اظہار یکجہتی کے لئے ان احتجاجات میں بھرپور شرکت کا اعلان کرتی ہے۔