ملتان: آٹے کے مصنوعی بحران اور کمر توڑ مہنگائی کے خلاف احتجاج

رپورٹ: PTUDC ملتان

پاکستان ٹریڈ یونین ڈیفنیس کمپئین (PTUDC) اورانقلابی طلبہ محاذ(RSF) کے زیرِاہتمام آٹے کے مصنوعی بحران اور کمر توڑ مہنگائی کے خلاف چوک حسین آگاہی ملتان میں آج مورخہ 26جنوری2020ء کواحتجاجی مظاہرے کا انعقاد کیا گیا جس میں PTUDC کی طرف سے ندیم پاشا ایڈووکیٹ، طارق چوہدری اور کامریڈ اسلم انصاری، پاکستان فوڈ ورکرز فیڈریشن کے چیئرمین عاشق بھٹہ اور وائس چیئرمین محبوب کشمیری، پاکستان پیپلز پارٹی کے ملتان ڈویژن کے انفارمیشن سیکرٹری ایم سلیم راجہ، پیپلز لائرز فورم کے احد شاہ کھگہ، نوید ہاشمی اور سعد ایڈووکیٹس، رکشہ یونین کے رہنما شیخ صفدرعمردراز، انجمن تاجران بوسن روڈ کے صدر و سابقہ کونسلر اُسامہ حیدر، TAP کے رہنما لیاقت چوہان اور نور خان، کمیونسٹ پارٹی کے رہنمایامین، واپڈا ہائیڈرویونین کے کارکن ذیشان شہزاد، انقلابی طلبہ محاذ کے احسن خان غلیزیی، عاصم خان،احمد سلہری، شاہ زیب خان، ذیشان بٹ، فہد جان، عمیر قریشی، رانا اظہار، کامریڈ ساجد، عثمان، آصف خان، فاروق بھٹی و دیگر نے شرکت کی۔

اس موقع پر مقررین کا کہنا تھا کہ آٹے کا مصنوعی بحران پیدا کر کے حکمران اپنی تجوریاں بھر رہے ہیں اور عوام بھوک سے بِلک بِلک کے مر رہی ہے۔ آئی ایم ایف کے نمائندے عوام دُشمن پالیسیاں نافذ کر کے محنت کشوں کے منہ سے آخری نوالا بھی چھین چکے ہیں۔ عوام مہنگائی کی چکی میں پس رہے ہیں اورحکمران اشرافیہ اپنی عیاشیوں اور آئی ایم ایف کی دلالی میں غرک ہیں۔  یہ کٹھ پتلی جمہوریت فوجی آمریت سے بھی زیادہ جابر اورعوام دُشمن ثابت ہوئی ہے۔ اُنہوں نے مزید کہا کہ ہم ان عوام دُشمن پالیسیوں اور موجودہ نظام کو مسترد کرتے ہوئے آج سے پورے پاکستان میں ملک گیر احتجاج کا آغاز کر رہے ہیں اور واپڈا، ریلوے، پی آئی اے، او جی ڈی سی ایل، PESSI سمیت تمام اداروں کے محنت کشوں سے اپیل کرتے ہیں کو وہ اس جدوجہد میں اپنا کلیدی کردار ادا کریں۔ ہم اپنی اس جدوجہد کو تیز کریں گے کیونکہ اب مزاحمت کے علاوہ محنت کشوں کے پاس اور کوئی راستہ نہیں بچا اور کھونے کو صرف زنجیریں ہیں جبکہ پانے کو سارا جہان ہے۔ سچے جذبوں کی قسم جیت ہماری ہو گی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*