پاکستان ریلوے کی مجوزہ نجکاری اور رائٹ سائزنگ کے خلاف ملک گیر احتجاج

رپورٹ: PTUDC

آل پاکستان ریلوے ٹریڈ یونین الائنس کی کال پر آج  کراچی تا خیبر تک ریلوے کے ملازمین نے ادارے کی مجوزہ نجکاری اور رائٹ سائزنگ کے خلاف ملک بھر میں شدید احتجاج کیا۔ ریلوے کے تمام انجن شیڈز، ورکشاپس اور شاپس میں بھرپور احتجاجی مظاہروں، ریلیوں اور احتجاجات منظم کئے گئے، جن میں ریلوے کے ہزاروں محنت کشوں نے شرکت کی اور نجکاری کے خلاف جدوجہد کرنے کے عزم کا عیادہ کیا گیا۔

لاہور

لاہورمیں مغل پورہ کیرج شاپ میں مرکزی اجتماع کا انعقاد کیا گیا۔ جس میں میں سینکڑوں ریل مزدوروں نے IMF، نجکاری اور ریلوے وزیر اعظم سواتی کے خلاف سخت نعرے بازی کی۔

اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہا ہے کہ اگر حکومت نے نجکاری کی مزدور دشمن پالیسی نہ روکی تو ہم ریل کا پہیہ جام کر دیں گے۔ ریل کی تباہی افسر شاہی کی عیاشیوں اور بدقماشیوں کی وجہ سے ہویی ہے، مزدور نے تو اپنے خون پسینے سے اس کا پہیہ چلایا ہے۔ جلسہ سے آل پاکستان ریلوے ٹریڈ یونین الائنس کے مرکزی صدر محمود ننگیانہ سے اختتامی خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم ریلوے کی نجکاری کسی قیمت پر نہیں ہونے دیں گے اور ہر محاذ پر اس کے خلاف جدوجہد کی جائے گی۔ اس جلسے میں پاکستان ٹریڈ یونین ڈیفنس کمپئین کے کامریڈز نے شرکت کرتے ہوئے اظہار یکجہتی کیا۔

راولپنڈی

راولپنڈی میں ریلوے انجن شیڈ میں نجکاری مہنگائی اور ملازمین کے دیگر مسائل کے حوالے سے احتجاج کیا گیا۔ مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے مرکزی رہنما ریلوے لیبر یونین نائب صدر راجہ عمران نے کہا کہ موجودہ تحریک انصاف کی حکومت IMF کی مزدور دشمن پالیسیوں کی وجہ سے غریب محنت کشوں کی زندگی اجیرن ہوچکی ہیں، اشیاء خوردونوش، پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ ادویات کی قیمتوں میں سمیت عام غریب آدمی کے لئے جسم و جان کا رشتہ برقرار رکھنا مشکل ہوچکا ہے۔ نجکاری، ڈائون سائزنگ اور رائٹ سائزنگ سےمزید حالات خراب ہونے کی طرف جائیں گے۔ سپریم کورٹ کے حالیہ معاشی قتل کے فیصلے کی مذمت کرتے ہیں اور برطرف کئے گئے ملازمین کے دکھ کو اپنا دکھ سمجھتے ہیں۔ ان تمام وحشتوں کا مقابلہ ایک دوسرے کے درمیان اتحاد و اتفاق سے ہی کیا جا سکتا ہے۔ پی ٹی یو ڈی سی کے کامریڈزنے بھی شرکت کی۔

اس موقع پر ملک انتصار جعفری، راجہ اعظم،جناب قادری صاحب اور دیگر قائدین نے بھی خطاب کیا.