اسلام آباد: پی ٹی سی ایل پنشنرز کا  احتجاج

رپورٹ:   محمد توقیر ،  ڈپٹی کنوینر  ’آل پاکستان پی ٹی سی ایل پنشنرزایکشن کمیٹی‘

مورخہ 3 مئی کو پی ٹی سی ایل پنشنرز نے عدالتی فیصلوں پر عملدرآمد نہ کرنے کے خلاف اسلام آباد پریس کلب کے باہر تین روزہ احتجاجی کیمپ لگایا۔  جس میں حکومت پاکستان اور اتصالات کی مجرمانہ ملی بھگت سے پی ٹی سی ایل  پنشنرز کے سات سال سے جاری معاشی استحصال کے خلاف نعرہ بازی کی گئی۔  آل پاکستان پی ٹی سی ایل پنشنرز ایکشن کمیٹی کے زیر اہتمام اس احتجاجی کیمپ سے پنشنرز رہنماؤں  اکرام اللہ کنوینر،  محمد اسلم بھٹو  چیف کوآرڈینیٹر ،  صادق علی،  سید امین شاہ،  محمد پرویز بھٹی،  فدا حسین،  محمد توقیر،  سید حامد گیلانی اور  شیخ پرویز حسین ڈپٹی کنوینر کے علاوہ مختلف سیاسی و سماجی جماعتوں کے عہدے داران نے خطاب کیا۔

مقررین نے اتصالات اور حکومت پاکستان کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا اور مطالبہ کیا کہ 40   ہزار عمر رسیدہ،  کمر خمیدہ پنشنرز بشمول بارہ ہزار بیوگان کو نجکاری معاہدے اور سپریم کورٹ کے فیصلوں کے مطابق فوری ادائیگیاں کی جائیں۔  سپریم کورٹ  نے اپنے فیصلے مورخہ 12جون 2015 کو چالیس ہزار پنشنرز کو حکومتی نوٹیفکیشن کے مطابق تمام ادائیگیاں کرنے کا حکم جاری کر رکھا ہے۔  عدالتی فیصلے کودوسال گزرنے اور حکم امتناعی نہ ملنے کے باوجود اتصالات ،  حکومت پاکستان میں موجود چند کالی بھیڑوں کی معاونت سے پنشنرز کو انکا یہ حق دینے میں لیت و لعل سے کام لے رہی ہے۔ 

مقررین نے اس بات کا عیادہ کیا کہ مطالبات پورے ہونے تک احتجاجی مظاہروں کا سلسلہ جاری رہے گا۔