پاکستان اسٹیل ملز سے محنت کشوں کی جبری برطرفیوں کے خلاف ملک بھر میں سخت احتجاج کیا جائے گا، پی ٹی یو ڈی سی

رپورٹ: مرکزی انفارمیشن بیورو

پاکستان ٹریڈ یونین ڈیفنس کمپئین PTUDCکی مرکزی باڈی کا ’اسٹیل ملز میں جبری برطرفیوں اور ادارے کی نجکاری‘ کے خلاف لائحہ عمل مرتب کرنے کے لئے مورخہ 29 نومبر کو آن لائن اجلاس منعقد ہوا، جس میں پورے پاکستان سے عہدے داران نے شرکت کی۔

اجلاس میں اسٹیل ملز سے جبری برطرفیوں کی مذمت کرتے ہوئے رہنماؤں کا کہنا تھا کہ اس وقت تبدیلی سرکار نے اپنے انتخابی وعدوں کے برخلاف تمام عوامی اداروں سے جبری برطرفیوں کا سلسلہ شروع کیا ہوا ہے اور ہر ادارے پر نجکاری کی تلوار چلائی جا رہی ہے۔ ہم پاکستان اسٹیل ملز سمیت تمام ادارو ں کے محنت کشوں کے ساتھ کھڑے ہیں اور PTUDC اس مشکل کی گھڑی میں اداروں اور ملازمین کے حقوق کے دفاع کے لئے ہر حد تک جائے گی۔اجلاس میں ملتان اور دیگر شہروں میں سیاسی کارکنوں کی گرفتاریوں پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے رہنماؤں کا کہنا تھا کہ سیاسی جدوجہد کو کچلنے کے لئے ریاستی مشینری کا استعمال، حکومتی بوکھلاہٹ کا اظہا ر ہے۔

پاکستان اسٹیل ملز سمیت تمام اداروں میں جبری برطرفیوں کے خلاف ہماری ملک گیر مہم جاری ہے اور اس سلسلے میں حالیہ تشکیل دیے گئے آل پاکستان ایمپلائز پنشنرز و لیبر تحریک میں شامل تمام مزدور یونینز بھی آئی ایم ایف کی پالیسیوں کے خلاف سرگرم عمل ہیں۔ 14اکتوبر کوبشمول PTUDC ملک کی تمام بڑی ٹریڈ یونینز کی جانب سے اسلام آباد میں دھرنا دیا گیا اور حکومت کو پیش کردہ مطالبات میں ’اسٹیل ملز کی بحالی اور جبری برطرفیوں کا خاتمہ‘ بھی شامل ہے۔ لیکن حکومتی اپنے مزدور دشمن اقدامات سے پیچھے نہیں ہٹ رہی جس کی وجہ سے ہم سخت اقدامات اٹھانے پر مجبور ہوئے ہیں، حالات کی تمام تر ذمہ داری حکومت وقت پر عائد ہوتی ہے۔ آئی ایم ایف کی پالیسیوں اور سرمایہ دارانہ نظام کے خاتمے تک یہ جدوجہد جاری رہے گی۔