صادق آباد: مزدوروں کے عالمی دن کی مناسبت سے یوم مئی کی تقریب

رپورٹ: PTUDC صادق آباد

قانون صرف استحصالی طبقے کے مفادات کی پاسداری کرتا ہے۔ کارخانے بیگار کیمپ بن چکے ہیں۔ مزدوروں کی اجرت زندگی گزارنے کے لئے ناکافی ہے۔ سوشل سیکورٹی کا محکمہ علامتی ہے، مالکان سے ساز باز کرکے ادارے میں مزدوروں کی علامتی رجسٹریشن کی جاتی ہے۔ مزدوروں کو انصاف فراہم کرنے کا طریقہ کار ناقص ،عدالتیں ناکافی اورغیرفعال ہیں، ان سے صرف مالکان کو فائدہ پہنچایا جارہا ہے۔ آج بھی مزدورکو آٹھ گھنٹے کا م کے دن کا حق میسر نہیںہے۔ بارہ سے اٹھارہ گھنٹے کام‘ بغیراوور ٹائم لیا جاتا ہے، قانون بے اثراورعمل درآمد والے ادارے غیر فعال ہیں۔ شرح منافع بڑھانے کے لئے مزدور کی اجرت اور سہولیات پر حملہ کیا جاتا ہے۔ ٹھیکے داری نظام اور تھرڈ پارٹی سسٹم محنت کشوں پر سب سے کاری حملے ہیں۔ مستقل نوعیت کے کام کرنے والے مزدوروں کو زندگی گزارنے کے لئے مستقل سہولیات اور مسلسل روزگار کی ضمانت فراہم کی جائے۔ کنٹریکٹ ملازمین مستقل کئے جائیں۔ حادثات کی روک تھام کے لئے فول پروف سیفٹی سسٹم ہر ادارے میں لازم قراردیا جائے۔ کارخانوں اور فیکٹریوں میں مجرمانہ غفلت کے سبب حادثات پر مالکان کے خلاف مقدمات قائم کئے جائیں۔ ٹریڈ یونین ازم پر قدغنیں ختم کی جائیں۔ مزدور کی کم ازکم اجرت ایک تولہ سونے کے برابر کی جائے۔ نجکاری پالیسی ملک اور مزدوروں کے خلاف سازش ہے اس کو فوری طور پر واپس لیا جائے۔ ہر تحصیل میںبااختیار لیبر کورٹس قائم کی جائیں۔ مزدور دشمن قوانین کا خاتمہ کیا جائے۔ ان خیالات کا اظہار پاکستان ٹریڈ یونین ڈیفنس کمپئین PTUDC کے زیراہتمام مزدوروں کے عالمی دن کی مناسبت سے یوم مئی کی منعقدہ تقریب میں مقررین نے کیا۔

یوم مئی کی مرکزی تقریب بارروم صادق آباد میں منعقد کی گئی۔ جس میں تحصیل صادق آباد کے کارخانوں، فیکٹریوں اور اداروں سے محنت کشوں ، سیاسی کارکنان، وکلاءاور صحافیوں نے شرکت کی۔ تقریب سے قمرالزماں خاں،عمر رشید،حافظ ندیم، بشیرسومرو،جہاہزیب بابر، سرور اعجاز، عباس تاج، چوھدری محمد ارشد، سید مختارالحسن گل ایڈووکیٹ، جہانگیر ورند نے خطاب کیا۔