آئی ایم ایف کے سامراجی بجٹ کے خلاف احتجاج کرنے پر قمر الزمان خان گرفتار، جھوٹا مقدمہ درج

رپورٹ: مرکزی انفارمیشن بیورو

تحریک انصا ف کی حکومت بڑے بے رحم طریقے سے آئی ایم ایف کے ایما پرعوام دشمن پالیسیوں کا نفاذ کر رہی ہے، حالیہ پیش ہونے والے وفاقی بجٹ میں محنت کشوں کی زندگیوں پر نئے مظالم ڈھانے کی تیاریاں مکمل کی جاچکی ہیں۔ ایک جانب نجکاری کے نئے وار کی تیاریاں کی جا رہی ہیں تو دوسری جانب بڑھتی ہوئی مہنگائی نے عام آدمی کی کم توڑ کر رکھ دی ہے۔ ان مظالم کے خلاف آواز اٹھانا بھی ایک جرم بن چکا ہے۔ تحریک انصاف کی حکومت فاشسٹ طریقہ کار کے ذریعے معاشی بربادی کے خلاف اٹھنے والی ہر آواز کو دبا دینا چاہتی ہے۔ اداروں میں لازمی سروسز ایکٹ کا نفاذ اور احتجاج پر غیر اعلانیہ پابندیوں کا نفاذ کیا جا چکا ہے۔

مورخہ 22 جون کو صادق آباد شہر کی ہر دلعزیز عوامی شخصیت، مزدور رہنما اور پاکستان ٹریڈ یونین ڈیفنس کمپئین (PTUDC) کے جنرل سیکرٹری قمرالزماں خاں کو شام 5:30 بجے سول کپڑوں میں ملبوس افراد نے اُن کے گھر سے گرفتار کیا جس کے بعد وہ اگلے چار گھنٹوں تک غائب رہے۔ گرفتاری والے دن انہوں نے آئی ایم ایف اور حکومت کی عوام دشمن معاشی پالیسیوں کے خلاف احتجاج کی کال دی تھی۔ تاہم ان کی گرفتاری کے بعد محنت کشوں، ریڑھی بانوں، دوکانداروں اور بار کونسل کے اراکین کی بڑی تعداد مقامی تھانے کے باہر جمع ہونے لگی۔ مسلسل بڑھتے ہوئے عوامی دباؤ سے گھبرا کر حکام کو قمرالزماں کو سامنے لانا پڑا۔ اُن کے خلاف امنِ عامہ میں خلل کی دفعہ (16-MPO) کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے اور وہ تاحال پولیس کی حراست میں ہیں۔

قمرالزمان خان نہ صرف صادق آباد بلکہ ملکی سطح پر بھی محنت کشوں کے حقوق کی طویل جدوجہد کے حوالے سے پہچانے جاتے ہیں۔ انہوں نے پیپلز پارٹی کے اندر اور باہر ہر پلیٹ فارم پر عوامی مسائل کے انقلابی حل کی آواز بلند کی ہے۔ وہ تقریباً تین دہائیوں سے پاکستان ٹریڈ یونین ڈیفنس کمپئین (PTUDC) کے پرچم تلے مزدور تحریک میں سرگرم ہیں اور نجکاری، مہنگائی و بیروزگاری کے خلاف سراپا احتجاج رہے ہیں۔

ریاست پاکستان کا آئین پر امن احتجاج کا حق ہر باشندے کو مہیا کرتا ہے لیکن یہ واقعہ تحریک انصاف حکومت کی بڑھتی ہوئی بوکھلاہٹ اور آزادی اظہار کی تیزی سے سکڑتی ہوئی گنجائش کی غمازی بھی کرتا ہے۔

پاکستان ٹریڈ یونین ڈیفنس کمپئین PTUDC کے پلیٹ فارم پر متحد ملک بھر کی تمام ٹریڈ یونینز، مزدور تنظیمیں اور محنت کش اس واقعہ کی سخت الفاظ میں مذمت کرتے ہو ئے ارباب اختیار کو تنبیہ کرتے ہیں کہ قمر الزمان خان کو رہا کیا جائے اور ان کے خلاف تمام جھوٹے مقدمات ختم کئے جائیں۔ ورنہ پورے پاکستان میں احتجاجات کاسلسلہ شروع کیا جا ئے گا۔ ہم ملک بھر کی تمام ترقی پسند قوتوں اورٹریڈ یونینز سے اظہار یکجہتی کی پر زور اپیل کر تے ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*