حفاظتی کٹ فراہم نہ کی گئی تو ٹرین نہیں چلائیں گے، ٹرین ڈرائیورز ایسوسی ایشن

رپورٹ: PTUDC لاہور

حکومت پاکستان کی جانب سے ریلوے کے جزوی آپریشن شروع کرنے کے حوالے سے ٹرین ڈرائیورز نے اپنے خدشات کا اظہار کیا ہے۔ ٹرین ڈرائیورز کی تنظیم، ٹرین ڈرائیورز ایسوسی ایشن  نے چیئرمین ریلویز کو خط لکھا ہے جس میں انہوں نے حفاظتی اقدامات یقینی بنانے کا مطالبہ کیا ہے۔ خط میں کہا گیا ہے کہ حفاظتی کٹ فراہم نہ کی گئی تو ٹرین نہیں چلائیں گے، ٹرین آپریشن بحال کرنے میں سب سے زیادہ خطرہ ٹرین ڈرائیورز کو ہوگا، اکثر ٹرین ڈرائیورز کی عمریں 50 سال سے زیادہ ہیں۔

انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ ہر ڈرائیور کو شیڈ چھوڑنے سے قبل ماسک، گلوزاورمنہ ڈھانپنے والی شیلڈ مہیا کی جائیں، عملہ کو روانگی سے قبل ہر انجن کو صاف اور ڈس انفیکٹ کرنے کی ہدایات کی جائے۔ انجن کے عملے کیلیے ہینڈ سینی ٹائزر، صابن اور پانی کا انتظام کیا جائے۔ ڈرائیورز کے لئے ہرشیڈ میں موجود کمروں کو ڈس انفیکٹ کیا جائے۔ کمروں میں موجود بستروں کی چادریں ہر ڈرائیور کے لیٹنے سے پہلے تبدیل کی جائیں اور رننگ روم کے عملے کی مکمل طور پر طبی جانچ پڑتال کی جائے۔

خط کے مطابق کمروں میں سماجی دوری کو ملحوظ خاطر رکھا جائے۔ ایس او پیز پرعملدرآمد کے لئے عملے کے ساتھ طبی ماہرین کی موجودگی یقینی بنائی جائے۔  ٹرین آپریشن بحال ہونے سے پہلے احتیاطی تدابیر پربغیر کسی تاخیر کے اپنائی جاِئیں۔ صدر ٹرین ڈرائیورز ایسوسی ایشن عبدالحفیظ نے کہا کہ ہم نے ریلوے حکام کو اپنے تحفظات سے آگاہ کر دیا ہے اگرہمیں حفاظتی سامان مہیا نہ کیا گیا تو ہم ٹرین نہیں چلائیں گے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*