ریلوے محنت کشوں کا ظالمانہ بجٹ کے خلاف ملک گیر احتجاج

رپورٹ: PTUDC لاہور

ریلوے لیبر یونین کی کال پر کل مورخہ 16جون کو ریلوے کے محنت کشوں نے آئی ایم ایف کے بجٹ کے خلاف ملک گیر احتجاج کیا۔ اس احتجاج میں ریلوے مزدور اتحاد میں شامل پاکستان ریلوے ورکشاپ یونینز، ریلوے ورکرز یونین سمیت ڈرائیورایسوسی ایشن اورپاکستان ٹریڈ یونین ڈیفنس کمپیئن PTUDC  نے بھی شرکت کی۔ پشاور سے لے کر کراچی تک تمام انجن شیڈز پر ریلوے کے محنت کشوں نے زبردست احتجاج کیا۔ ہرجگہ پر محنت کشوں نے ریلوے انجنزکو کئی گھنٹے روکے رکھا اور حکمرانوں کو پیغام دیا کہ یہ محنت کش ہی ہیں جو پورے نظام کو چلا رہے ہیں۔

مرکزی جلسہ لاہور میں ہوا، جس میں محنت کشوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔ جس سے خطاب کرتے ہوئے ریلوے لیبر یونین کے سرپرست اعلیٰ سرفرازخان، مرکزی صدر عنایت گجر، انفارمیشن سیکرٹری محمد عاصم، ریلوے ورکرز یونین کے مرکزی نائب صدرراجہ رضوان ستی،  PTUDC کے مرکزی رہنما عمر شاہد اور دیگر نے کہا کہ ہم آئی ایم ایف کے اس ظالمانہ بجٹ کو مسترد کرتے ہوئے حکمرانوں کو یہ باور کروانا چاہتے ہیں کہ محنت کش استحصال کے خلاف متحد ہو اور وہ حکمرانوں کے ہر وار کا بھرپور جواب دے گا۔ سپریم کورٹ کے ریلوے ملازمین کے حوالے سے دیے گئے ریمارکس کی سخت الفاظ میں مذمت کی گئی اور مطالبہ کیا گیا کہ اگلی سماعت میں سپریم کورٹ اپنے ریمارکس واپس لے۔ اسٹیل ملز کے محنت کشوں ساتھ اظہار یکجہتی کرتے ہوئے مقررین کا کہنا تھا کہ ہم عوامی اداروں کی نجکاری ہر گز نہیں ہونے دیں گے۔ آخر میں فیصلہ کیا گیا کہ جب تک حکومت اس ظالمانہ بجٹ کو واپس نہیں لیتی اور ملازمین کی تنخواہوں میں 100 فیصد اضافہ نہیں کرتی، ہم اپنا احتجاج جاری رکھیں گے اور اس کا دائرہ کار وسیع کرتے ہوئے ریلوے سمیت پورا نظام مفلوج کر دیا جائے گا۔

ریلوے کے محنت کشوں کی بجٹ کے خلاف  تحریک جاری ہے۔ اس سلسلے میں کل مورخہ 18 جون کو ریلوے مزدور اتحاد کے زیر اہتمام بارہ بجے موٹر سائیکل ریلی ورکشاپ سے پریس کلب تک ریلی نکالی جائے گی اور پریس کلب کے باہر ظالمانہ بجٹ کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا جائے گا۔ کل ہونے والے احتجاجات میں چند کی تصویری رپورٹ ذیل میں شائع کی جا رہی ہے۔

راولپنڈی

کراچی

پشاور

محنت کشوں نے ریلوے انجنزکو کئی گھنٹے روکے رکھا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*