فیصل آباد: ستارہ کیمیکل فیکٹری کے محنت کشوں کی ہڑتال

رپورٹ: PTUDC فیصل آباد

ستارہ کیمیکل فیکٹری فیصل آباد کے بڑے صنعتی اداروں میں شمار کی جا تی ہے، ستارہ گروپ کا اہم ادارہ اور پاکستان بھرکی ٹیکسٹائل صنعت کو کیمیکل مہیا کرنے کے حوالے سے اس کا ایک مقام ہے۔ یہ فیکٹری ہرسال اپنے کاروبار کو وسعت دیتے ہوئے سالانہ اربوں میں منافع کما رہی ہے۔ تاہم اس منافع کا حصول ممکن بنانے والے فیکٹری کے محنت کش مشکل حالات میں زندگی گزر بسر کرنے پر مجبور ہیں۔
محنت کشوں کو حکومت کی اعلان کردہ کم از کم اجرت بھی نہیں دی جا رہی، محنت کشوں کے مطابق انہیں صرف ماہانہ 12,000 تنخواہ ہی دی جا رہی ہے اور روزانہ 12گھنٹے سے زیادہ کام لیا جا رہا ہے۔ چھٹی کا تصور تک نہیں اور بیماری کی صورت میں بھی تنخواہ کا ٹ لی جا تی ہے اس کے ساتھ محنت کشوں کو سوشل سیکیورٹی اور صحت جیسی سہولیات بھی مہیا نہیں کی گئیں۔

ان تمام مسائل کے خلاف آج مورخہ 3اکتوبر کو محنت کشوں نے فیکٹری میں مکمل کام بند کرتے ہوئے فیکٹری انتظامیہ کے خلاف سخت نعرے بازی کرنا شروع کر دی۔ جب انتظامیہ کی جانب سے انہیں ڈرایا دھمکایا گیا تو انہوں نے احتجاج کا دائرہ وسیع کرتے ہوئے سرگودھا روڈ کو ٹائر جلا کر بند کر دیا۔ اس دوران انتظامیہ کی طرف سے احتجاج ختم کروانے کی کوششیں جاری رہی، پاکستان ٹریڈ یونین ڈیفنس کمپئین PTUDCکی جانب سے کامریڈ عمر رشید کی قیادت میں وفد نے محنت کشوں کے احتجاج میں شرکت کی اور ان کا ساتھ مکمل اظہار یکجہتی کاپیغام دیتے ہوئے فتح تک جدوجہد جاری رکھنے کے عزم کا اعادہ کیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*