کوئٹہ : ریڈیو پاکستان کے محنت کشوں کی جدوجہد جاری

رپورٹ: PTUDC کوئٹہ

پاکستان ٹریڈ یونین ڈیفنس کمپئین PTUDC کے وفد نے کوئٹہ میں ریڈیوپاکستان کے یونین عہدیداروں سے ریڈیو پاکستان کے کوئٹہ دفتر میں ملاقات کی۔ اس دوران یونین کے صدر عبدالرزاق کرد اور علی محمد زہری نے ریڈیو پاکستان میں ہونے والے حکومتی مظالم اور کنٹریکٹ ملازمین کو نوکریوں سے برخاستگی کے بارے میں بتایا کہ اسلام آباد میں یونین عہدیداروں اور ریڈیو ملازمین کی جانب سے ان حکومتی اقدامات کے خلاف دھرنا چل رہا ہے، ہم ان اقدامات کے خلاف آخری دم تک لڑیں گے اور حکمرانوں کو ہرگز اجازت نہیں دیں گے کہ وہ ہمارے ادارے پر شب خون مارے۔ حکومت احتجاج کو ختم کرنے کے لیے ملازمین میں خوف و ہراس پھیلانے اور لازمی سروس ایکٹ نافذ کرنے کی کوشش کر رہی ہے تاکہ یونین سازی اور احتجاج کو یکسر ختم کیا جائے اور بیوروکریسی اور حکومت کھل کر ادارے کو لوٹ سکیں۔

یونین عہدیداران کا کہنا تھا کہ حکومت اس وقت ریڈیو پاکستان کے اثاثوں، زمینوں اور عمارات کو فروخت کرنے کے درپے ہے۔ ادارے کو جدید خطوط پر استوار کرنے کی بجائے اسے مکمل نظرانداز کردیا گیا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ریڈیو پاکستان نے علاقائی زبانوں کی ترویج میں ایک اہم کردار ادا کیا ہے۔ جبکہ موجودہ حکومت ادارے کے محنت کشوں کی مراعات کو ختم کرنے اور ڈاﺅن سائزنگ کے ذریعے ادارے سے محنت کشوں کو فارغ کرنے کے اقدامات کر رہی ہے۔ ہمیں چاہیے کہ ہم سب متحد ہو کر ان مزدور دشمن اقدامات نجکاری، ڈاﺅن سائزنگ اور آئی ایم ایف کی شرائط کے خلاف اٹھ کھڑے ہوں کیونکہ یہ سب کی مشترکہ لڑائی ہے۔

PTUDC کے وفد نے ریڈیو پاکستان کے یونین عہدیداروں اور ورکرز کی جدوجہد کو خراج تحسین پیش کیا اور ان کی جدوجہد کی مکمل حمایت کی اور ہر سطح پر محنت کشوں کی جدوجہد میں ساتھ دینے کا یقین دلایا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*