رحیم یار خان: شیخ زید ہسپتال ومیڈیکل کالج کے برطرف ملازمین کا دھرنا جاری

رپورٹ: PTUDC رحیم یار خان

شیخ زید ہسپتال ومیڈیکل کالج رحیم یار خان میں 846 ملازمین جو کہ پچھلے 12سے15سال کے عرصہ سے اڈھاک اور ڈیلی ویجز کام کر رہے تھے انہیں پانچ ماہ کی تنخواہوں سے محروم کرکے اب جبری برطرف کر دیا گیا۔ ملازمین نے اس فیصلے کو تسلیم کرنے سے انکار کرتے ہوئے خان پور اڈہ رحیم یار خان کے مقام پر دھرنا دیا ہوا ہے جس کی وجہ سے مین روڈ مکمل طور پر بند ہے۔

اس سے پہلے 700 ملازمین کو ان کی شاندار جدوجہد کی بدولت ستمبر 2020ء میں 700 ملازمین کے کنٹریکٹ میں توسیع کی گئی تھی تاہم تنخواہوں کی ادائیگی کو بجٹ کی موجودگی کے ساتھ منسلک کیا گیا تھا۔ تاہم اب کنٹریکٹ میں مزید توسیع یا انہیں مستقل کرنے کی بجائے 846 ملازمین کو جبری برطرف کر دیا گیا۔ ان میں مختلف گریڈ کے ملازمین شامل ہیں۔ ملازمین کے مطابق ہسپتال میں اس وقت 1600 کے قریب منظور شدہ آسامیاں خالی پڑی ہیں مگر انہیں ان آسامیوں میں ایڈجسٹ کرنے کی بجائے انہیں جبری برطرف کیا جانا ظلم کی بدترین مثال ہے۔

ملازمین کے مطالبات میں نااہل ایم ایس شیخ زید ہسپتال، ، ڈاکٹرآغا توحید کا فوری ٹرانسفر، 846 ملازمین کو ہسپتال کی 1600 خالی سیٹوں پر ایڈجسٹ کرکے ان کو مستقل ملازمت فراہم کی جائے اور پچھلے 5 ماہ کی تنخواہوں کی فی الفور ادائیگی شامل ہے۔ سخت سردی کے باوجود ملازمین اپنے حق کے لئے بچوں اور خواتین کے ساتھ دن رات مسلسل 10 دن سے دھرنا دیے ہوئے ہیں۔

پاکستان ٹریڈ یونین ڈیفنس کمپئین PTUDC روزاول سے ہی ان ملازمین کے ساتھ کھڑی ہے، پی ٹی یو ڈی سی کی جانب سے اظہار یکجہتی اور ملازمین کے ساتھ ہر ممکن تعاون بھی کیا جا رہا ہے۔ پی ٹی یو ڈی سی کی مرکزی کابینہ کی جانب سے مورخہ 15 جنوری کو مرکزی صدر نذر مینگل اور مرکزی جنرل سیکرٹری قمر الزمان خاں کی زیر قیادت چنگیز ملک مرکزی جوائنٹ سیکرٹری، عمر شاہد مرکزی آرگنائزر، رؤف لنڈ مرکزی رہنما، انور پنہور صوبائی صدر سندھ، جنت حسین مرکزی رہنما، علی تراب ریجنل آرگنائز سنٹرل پنجاب اور دیگر نے شرکت کی۔ مورخہ 17 جنوری کو اکبر میمن چیئرمین پی ٹی یو ڈی سی اسٹیل ملز کراچی، حمید خان مرکزی صدر بلوچستان پروفیسرز اینڈ لیکچرز ایسوسی ایشن، بلوچستان آرگنائزر حسن جان اور دیگر نے شرکت کی اور ملازمین کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کیا۔

اس موقع پر پی ٹی یو ڈی سی کی مرکزی قیادت کی جانب سے ملازمین کی آواز کو ملک بھر میں پھیلانے کے عزم کا عیادہ کیا گیا اوراعلان کیا گیا کہ اگر حکومت نے فوری طور پر ان کے مطالبات کو تسلیم نہ کیا تو پی ٹی یو ڈی سی شیخ زید ہسپتال کے ملازمین کے لئے ملک گیر احتجاجات کے سلسلے کا آغاز کرے گی اور تمام حالات کی ذمہ داری حکومت وقت پر عائد ہو گی۔