وفاقی بجٹ کے خلاف محنت کشوں کے احتجاجات کا آغاز

رپورٹ: انفارمیشن بیورو

آئی ایم ایف کا تیار کردہ  وفاقی بجٹ برائے مالی سال 2020-21ء کو ملک بھر کے محنت کشوں نے مسترد کردیا اور اپنے حقوق کی خاطر احتجاجات کا سلسلہ شروع کر دیا ہے۔ ان کی احتجاجات کی تفصیل کچھ یوں ہے؛

لاہور
مورخہ 13جون کو ریلوے ملازمین نے اولڈ شیڈ لاہورمیں احتجاجی مظاہرہ کیا۔ مظاہرین کی جانب سے حکومت اور وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید کے خلاف شدید نعرے بازی کی گئی۔ مظاہرین نے بجٹ کو قاتل اور مزدور دشمن قرار دیتے ہوئے کہا کہ بجٹ میں سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں اضافہ نہ کرکے سرکاری ملازمین کا معاشی قتل کیا گیا۔

ریلوے یونین کے عہدیدران کا کہنا تھا کہ جب تک حکومت میں نااہل لوگ بیٹھے ہیں ایسے ہی عوام کی حق تلفیاں ہوں گی لیکن اس بار اپنا حق لیے بغیر خاموش نہیں بیٹھیں گے۔ مظاہرین کی جانب سے تیز گام ایکسپریس ٹرین کے انجن کو بھی روکا گیا۔ بانی و قائد تحریک ریلوے سرفراز خان اپنی بیماری کے باجود مظاہرے میں شامل ہوئے اور ان کا کہنا تھا کہ آج کیا مظاہرہ علامتی تھا اگر محنت کشوں کی تنخواہوں اور پنشنز میں 100فیصد اضافہ اور عوامی حقوق کی تحفظ نہ کیا گیا تو ملک بھر میں شدید احتجاج کیا جائے گا اورریل کے نظام کو مکمل طور پر جام کر دیا جائے گا۔ آخر میں عمران خان کا پتلا نذر آتش کیا گیا۔

پاکستان ٹریڈ یو نین ڈیفنس کمپیئن PTUDC کی جانب سے مرکزی رہنما عمر شاہد، عامر کریم اور دیگر نے احتجاج میں شرکت کی اور محنت کشوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کااظہار کیا۔

راولپنڈی
راولپنڈی میں بھی مورخہ 13جون کو انجن شیڈ میں ریلوے لیبریونین کی جانب سے احتجاجی مظاہرے کا انعقاد کیا گیا۔ اس موقع پر ریلوے ملازمین نے وفاقی بجٹ کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ وفاق کا بجٹ سرکاری ملازمین کا معاشی قتل ہے۔ تبدیلی سرکار نے عوام کی مشکلات میں اضافے کی بجائے کچھ نہیں کیا۔ عوام دشمن بجٹ کے خلاف بھرپور احتجاجی تحریک چلائی جائے گی۔


 PTUDC اور ریلوے لیبر یونین کے مرکزی رہنما راجہ عمران کا کہنا تھا کہ آئی ایم ایف کی پالیسیا ں دراصل محنت کشوں کے معاشی قتل عام کے مترادف ہیں، ہم ان کے خلاف ہر محاذ پر جدوجہد کریں گے اور مطالبات پورے ہونے تک جدوجہد جاری رکھیں گے۔

مالاکنڈ
مالاکنڈ میں گورنمنٹ ایمپلائز کوآرڈی نیشن کونسل کے زیر اہتمام وفاقی بجٹ کے خلاف احتجاج مظاہرہ کیا گیا، مظاہرین نے بجٹ کو عوام دشمن بجٹ قرار دیتے ہوئے اس کے خلاف سخت احتجاج کیا۔ پاکستان ٹریڈ یونین ڈیفنس کمپیئن PTUDC کی جانب سے مرکزی نائب صدر غفران احد نے احتجاج میں شرکت کی اور محنت کشوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کااظہار کیا۔

راولا کوٹ
راولا کوٹ میں جمو ں کشمیر نیشنل سٹوڈنٹس فیڈریشن JKNSF اورپاکستان ٹریڈ یو نین ڈیفنس کمپیئن PTUDC کی جانب سے وفاقی بجٹ کے خلاف مظاہرے کا انعقاد کیا گیا جس میں طلبا اور محنت کشوں نے شرکت کی۔ مظاہرین نے سٹیل ملز اور ریلوے کے محنت کشو ں کے ساتھ بھی اظہار یکجہتی کا اظہار کیا۔ اس موقع پر مرکزی چیئرمین JKNSF ابرار لطیف، مرکزی رہنما PTUDCجنت حسین اور دیگر کا کہنا تھا کہ محنت کشوں کے معاشی قتل عام کے خلاف تحریک کاآغاز کر رہے ہیں اور آنے والے وقت میں احتجاجات کا دائرہ کار مزید وسیع کیا جائے گا اور بجٹ میں عوام کو ریلیف ملنے تک یہ سلسلہ جاری رہے گا۔

بھان سیدآباد

وفاقی بجٹ  کے خلاف پاکستان ٹریڈ یو نین ڈیفنس کمپیئن PTUDC اور بیروزگار نوجوان تحریک کے طرف سے مورخہ 13 جون پریس کلب بھان سیدآباد کے سامنے ایک احتجاجی مظاہرہ کیا گیا، جس سے صوبائی صدر انور پنهور اور بی این ٹی کے شاہ محمد پنھور، اقبال میمن ، سجاد گچل، علی شیر بروھی اور نوراللہ بگھیو نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اس بجٹ میں محنت کشوں خاص کر کے کسانوں، بیروزگاروں اور طلبہ کو کسی قسم کا بھی کوئی ریلیف نہیں دیا گیا ہے جبکہ بجٹ کا 90 فیصد حصہ وہ ہی ادا کر رہے ہیں۔ بدلے میں اس کو بھوک، بیروزگاری اور مہنگائی دی جا رہی ہے، جو سراسر ظلم و زیادتی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ حکمران جھوٹ بول رہے ہیں کہ انہوں ٹیکسز میں اضافہ نہیں کیا۔ حقیقت یہ ہے کہ اس سال کی نسبت آنے والے سال میں 1000 ارب روپے مزید ٹیکس لیا جائے گا جو 25 فیصد زیادہ ہے۔

انہوں نے مطالبہ کیا ہے کہ ملک کے اندر مہنگائی کو ختم کرنے کے ساتھ محنت کشوں کو روزگار فراہم کیا جائے۔  ریلوے اور اسٹیل ملز کے ملازمین کی برطرفیوں کی مخالفت کرتے ہوئے کہا ان اداروں کی بحالی کے اقدامات کیے جائیں.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*